سلاجیت کی استعمال سے متعلق چند اہم باتیں:

سلاجیت کی استعمال سے متعلق چند اہم باتی کیا سلاجیت صرف 40سال سے بڑے شادی شدہ مرد ہی کو استعمال کرنی چاہیے؟

سلاجیت کی استعمال سے متعلق چند اہم باتی کیا سلاجیت صرف 40سال سے بڑے شادی شدہ مرد ہی کو استعمال کرنی چاہیے؟
سلاجیت انگریزی دواؤں کی طرح وقتی اور غیرفطری طورپر جذبات کو ابھارنے والی دوائی ہے نہیں۔ جو صر ف مخصوص موسم یا عمر میں ہی استعمال کرے۔ یہ خالص قدرتی وٹامین سے بھرپور خوراک ہے جس کوئی بھی مردیا خاتون عمر کے کسی بھی حصیے میں استعمال کرسکتے بشرطہ جن افرادکواسکی ضرورت ہو۔ یہ بات عجیب ہے کہ ہم اپنے جنسی کمزوری، نامردی کی علاج کے لیے 40سال تک انتظار کرے ۔ظاہر بات ہے کہ ہم سلاجیت محض فن یا لطف کے لیے استعمال نہیں کر رہے ہیں ۔جنسی کمزوری ، نامردی ، شوگر، اور ہڈی جوڑوں کے مریض ،عام جسمانی ،ذہنی کمزوری اوردیگر امراض میں مبتلا افراد (مردخواتین) چاہے وہ شادی شدہ یا غیر شادی شدہ عمر کے کسی بھی حصے میں
استعمال کر سکتے ہیں۔
*کیا سلاجیت کو صرف گرمیوں میں استعمال کرنی چاہے؟
بعض لو گ کایہ کہنا بھی غلط ہے کی سلاجیت کو صرف سر دیوں میں استعمال کرنی چاہیے۔ اگر گرمیوں میں آپ کی بیماری یا کمزوری نہیں ہوتی تو نہ کرے مگر دواء کی ضرورت توہرموسم اور سیزن میں ہوتی ہے ۔ ہاں اس مقدار، یا طریقہ استعمال میں فرق ہو سکتاہے۔
*یہ محض ان لوگوں کی باتیں ہیں جو صرف انجوائمنٹ کے لے سلاجیت کو استعمال کرنا چاہتے ہیں۔
*سلاجیت جسم میںیورک اسیڈ کی زیادتی ہونے کی صورت میں استعمال نہیں کرسکتے ۔
*بلڈ پریشر کے مریض استعمال نہیں کرسکتے ۔
*عورتیں اپنے مخصوص ایا م میں استعمال نہیں کر سکتے۔


* kya salajeet sirf 40 saal se barray shadi shuda mard hi ko istemaal karni chahiye ?
salajeet koi angrezi dawaon ki terhan waqti aur ghirftri tour par jazbaat ko ubhaarne wali dawai hai nahi. jo sr f makhsoos mausam ya Umar mein hi istemaal kere. yeh khalis qudrati vitamins se bharpoor khoraak hai jis koi bhi مردیا khatoon Umar ke kisi bhi hisay mein istemaal kar saktay bashatay ki jin afrad ko is ki zaroorat ho. yeh baat ajeeb hai ke hum apne jinsi kamzoree, namardi ki ilaaj ke liye 40 saal tak intzaar kere. zahir baat hai ke hum salajeet mehez fun ya lutaf ke liye istemaal nahi kar rahay hain. jinsi kamzoree, namardi, sugar, aur haddi joron ke mareez, aam jismani, zehni kamzoree aur deegar amraaz mein mubtala afraad (Mard o Khawatain) chahay woh shadi shuda ya ghair shadi shuda Umar ke kisi bhi hissay mein
istemaal kar satke hain .
* kya salajeet ko sirf garmiyon mein istemaal karni chahay ?
baaz lo g kaya kehna bhi ghalat hai ki salajeet ko sirf sir diyoon mein istemaal karni chahiye. agar garmiyon mein aap ki bemari ya kamzoree nahi hoti to nah kere magar dawa ki zaroorat to har mousam aur season mein hoti hai. haan is miqdaar, ya tareeqa istemaal mein farq ho sakta hai .
* yeh mehez un logon ki baatein hain jo sirf Enjoyment ke le salajeet ko istemaal karna chahtay hain .
* salajeet jism uric acid ki zayad-ti honay ki soorat mein istemaal nahi kar saktay .
* blood pressure ke mareez istemaal nahi kar saktay .
* aurtain apne makhsoos aya meem mein istemaal nahi kar satke .